انڈیا سے برآمد ہونے والے حلال گوشت سے ’حلال‘ کا لفظ کیوں ہٹایا گیا؟

نڈین وزارت تجارت و صنعت کے محکمہ ایگریکلچر اینڈ پروسیسڈ فوڈ پروڈکٹ ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی (اپیڈا) نے حلال گوشت سے متعلق ہدایت نامے سے لفظ ’حلال` کو ہٹا دیا ہے، جس کا مطلب ہے کہ گوشت برآمد کرنے والی سبھی کمپنیوں کو اب حلال سرٹیفیکیشن کی ضرورت نہیں ہو گی بلکہ صرف ان کمپنیوں کو ہو گی جو مسلم ممالک کو گوشت برآمد کرتی ہیں۔

نئے ہدایت نامے کے مطابق اب برآمد کیے جانے والے گوشت پر لکھا جائے گا کہ ’جانوروں کو درآمد کرنے والے ممالک کے قواعد کے مطابق ذبح کیا گیا ہے۔‘

واضح رہے کہ گوشت سے متعلق اس ہدایت نامے میں پہلے لکھا جاتا تھا کہ ’تمام جانوروں کو اسلامی شریعت کے مطابق جمیعت العلمائے ہند کی نگرانی میں ذبح کیا جاتا ہے، جس کے بعد ہی جمیعت حلال سرٹیفیکٹ دیتی ہے۔`

اس تبدیلی کے بعد اپیڈا نے واضح کیا ہے کہ ’حلال‘ کا سرٹیفکیٹ دینے میں کسی بھی سرکاری محکمے کا کوئی کردار نہیں۔

Vinkmag ad

Star Asia

Star Asia

اسٹار ایشیا پاکستان کا مقبول نیوز چینل ہے۔

Read Previous

کرائسٹ چرچ میں قومی کرکٹ سکواڈ کی پانچویں کورونا سیمپلنگ ہو گئی،کورونا سیمپلنگ کے نتائج کل موصول ہو ں گے ۔

Read Next

کیپیٹل ہل کا محاصرہ تصاویر میں