شہبازشریف نے عدالت میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ چنیوٹ مائنز کا ٹھیکہ ملی بھگت سے امریکی شہری کو دیا گیا

0 8

شہبازشریف نے عدالت میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ چنیوٹ مائنز کا ٹھیکہ ملی بھگت سے امریکی شہری کو دیا گیا ، فراڈ کو نیب نے نہیں میں سامنے لے کر آیا ،، نیب کو کہا کہ چھ ماہ میں انکوائری کریں ، نیب نے کہا کہ ڈکیتی کامیاب نہیں ہوئی اس لیے کیس نہیں بنت
اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز اور اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہبازشریف کو عدالت پیش کیا گیا ۔شہبازشریف نے عدالت میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ عدالت کا مشکور ہوں کہ صحت کی سہولیات فراہم کرنے کا حکم دیا ، مجھے صرف گزارشات پیش کرنے کیلئے تین منٹ کا قت دیا جائے ، میں چنیوٹ مائنز سے متعلق کچھ تفصیلات پیش کرنا چاہتا ہوں ، چنیوٹ میں موجود ذخائر کی مالیت چار ارب ڈالر کی ہے ۔پہلے فیز کا ٹھیکہ ملی بھگت سے امریکی شہری کو دیا گیا ، فراڈ کو نیب نے نہیں میں سامنے لے کر آیا ، ، ایک تو ٹھیکے میں چوری اور اوپر سے سینہ زور ی کی گئی ، نیب نے 13 سال بعد ریفرنس دائر کیا ، اگر میرے دل میں بددیانتی ہوتی تو میں فائدہ لے سکتا تھا ، مجھ پر سیاسی اور دیگر اطراف سے دباﺅ تھا ، نیب کو کہا کہ چھ ماہ میں انکوائری کریں ، نیب نے کہا کہ ڈکیتی کامیاب نہیں ہوئی اس لیے کیس نہیں بنتا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.