وزیراعظم عمران خان نے دنیا بھر میں کووڈ 19 سے پیدا اقتصادی بحران سے نمٹنے کیلئے 10 نکاتی ایجنڈا پیش کر دیا

0 18

وزیراعظم عمران خان نے دنیا بھر میں کووڈ 19 سے پیدا اقتصادی بحران سے نمٹنے کیلئے 10 نکاتی ایجنڈا پیش کر دیا۔ انہوں نے ترقی پذیر اور معاشی دباؤ کے شکار ممالک کے قرضوں کی منسوخی کی تجویزبھی دی۔

اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کووڈ 19 کا بحران عالمی جنگ کے بعد سے اب تک کا سب سے سنگن بحران ہے، کورونا کے باعث 1930 بد ترین کساد بازی کے بعد سے اب تک کا خطرناک معاشی بحران آیا ہے، غریب ممالک اس سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں، ترقی پذیر ممالک میں 100 ملین افراد غربت کا شکار ہوچکے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں ہماری لاک ڈاؤن کی کامیاب پالیسی رہی، ہماری کوشش نہ صرف عوام کو وائرس سے بچانا تھی بلکہ ان کوبھوک سے بھی محفوظ رکھنا تھی، ہم نے غریبوں کی امداد اور معیشت کے لئے 8 بلین ڈالر کا ریلیف پیکج فراہم کیا جو ہمارے جی ڈی پی کا 3 فیصد تھی، اب تک ہماری پالیسی کامیاب رہی، مگر اب ہمیں پہلے سے بھی زیادہ خطر ناک وائرس کی دوسری لہر کا سامنا ہے، اب ہمیں اپنی معاشی ترقی کو برقرار رکھنے اور بڑھتے ہوئے کیسز کے چیلنج کا سامنا ہے۔

عمران خان نے مزید کہا پاکستان آئی ایم ایف کے پروگرام میں بجٹ خسارہ کو کم کرنے کا پابند ہے، مجھے امید ہے کہ باقی ترقی پذیر ممالک کو بھی اسی مسئلہ کا سامنا ہوگا، بجٹ خسارہ کو کم کرنے اور معیشت کی ترقی کا واحد راستہ مزید مالی وسائل تک رسائی ہے، گزشتہ اپریل میں نے قرضوں میں ریلیف کی اپیل کی تھی، میں شکر گزار ہوں جی 20 ممالک نے مئی میں قرضوں کی ادائیگی کو منسوخ کیا اور اگلے برس جون تک اس میں توسیع دی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.