نزلہ زکام سے چھٹکارا حاصل کرنا چاہتے ہیں تو یہ حفاظتی تدابیر اپنائیں

لاہور (سٹٓارایشیا نیوزاسپیشل) موسم سرما کے آغاز پر چھوٹے بڑے سب کسی نہ کسی وجہ سے نزلہ زکام میں مبتلا ضرور ہو جاتے ہیں ،کچھ کو یہ شکایت ٹھنڈا پینے اور بچوں میں ٹھنڈے پانی کے نہانے کی وجہ سے اس کیفیت کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ ڈاکٹروں کیکلینک کھچا کھچ بڑھنا شروع ہو جاتی ہیں جن میں اکثر مریضوں کی شکایت نزلہ زکام ہی ہو تی ہے لیکن اس سے خود کو محفوظ رکھنے کا سب سے اچھا طریقہ یہ ہے کہ اسے وہیں روک دیا جائے جہاں یہ شروع ہوا تھا اور یہاں کچھ ایسے طریقے ہیں، جن پر عمل کرکے آپ اسے روک سکتے ہیں۔
وٹامن ڈی حاصل کریں تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ جن لوگوں میں وٹامن ڈی کی کمی ہوتی ہے انہیں نزلہ ، زکام کی شکایتیں زیادہ ہوتی ہیں۔ اب یہاں یہ بات ذہن میں آتی ہے کہ وٹامن ڈی کا نزلہ زکام سے کیا تعلق ہے تو ہم آپ کو بتاتے چلیں کہ وٹامن ڈی انفیکشنسے لڑنے کے نظام میں مدد فراہم کرتا ہے اور آپ اپنی خوراک سے بھی اس کی کافی مقدار حاصل کرسکتے ہیں لیکن اس کیلئے آپ کو پہلے اپنے ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیے اور صحیح خوراک لینی چاہیے۔ اتھوں اور چہرے کو صاف رکھیں ہوسکتا ہے آپ نے کبھی اس بات پر غور نہ کیا ہو لیکن آپ اپنے چہرے کو کئی مرتبہ چھوتے ہیں اور 2016 میں ہونیوالی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ اوسطاً ایک شخص ہر گھنٹے میں 16 مرتبہ اپنے چہرے کو چھوتا ہے۔ تاہم اس ایک گھنٹے کے دوران ہم کئی چیزیں کرتے ہیں۔
اپنے ہاتھوں سے مختلف چیزوں کو چھوتے ہیں، جس سے وائرس پہلے ہمارے ہاتھ اور پھر چہرے یا منہ کو چھونے سے ہمارے نظام میں باآسانی داخل ہوجاتا ہے، لہٰذا ہمیں نہ صرف اس میں احتیاط کرنی چاہیے بلکہ لوگوں سے ہاتھ ملانے سےبھی بچنا چاہیے۔ لہٰذا ہاتھوں کا صحیح طریقے سے دھونا ضروری ہے اور کم از کم 20 سیکینڈ تک ہاتھ دھونے چاہییں۔اور اگر ہاتھ نہ دھوسکیں تو سنیٹائز کا استعمال کرنا چاہیے۔
اپنے موبائل کو جراثیم سے بچائیں ایک منٹ کو آپ سوچیں کہ آپ اپنے موبائل کو باتھ روم اسٹال، کچن کے کنارے، کام کی میز، کار کے ڈیش بورڈ، ریسٹورینٹ ٹیبل اور پتہ نہیں کہاں کہاں رکھتے ہیں۔ اس حوالے سے یونیورسٹی آف ایریزونہ کی ایک تحقیق کے مطابق آپ کے موبائل فون پر ٹوائلٹ سیٹ کے مقابلے میں10 گناہ زیادہ بیکٹیریا ہوتے ہیں تو جب بھی ہم اپنا موبائل کسی ایسی جگہ پر لگتے ہیں تو اس میں جراثیم کی تعداد میں کئی گناہ اضافہ ہوجاتا ہے۔
زنک سے بھرپور رہیں نزلہ و زکام ہونے کی ایک اور وجہ جسم میں زنک (جست) کی کمی بھی ہے،لہٰذا جسم میں زنک کی کافی مقدار مختلف وائرسز کو بڑھنے کو کم کردیتی ہے۔ اس لیے اگر کبھی آپ کو اس طرح کی کسی شکایت کا سامنا ہو۔تو آپ بیماری کے آغاز کے ساتھ ہی زنک ٹیبلیٹس کا استعمال کرسکتے ہیں، جو اس کی مدت اور شدت کو کم کرنے میں مدد کرسکتی ہے۔ پروبائیوٹکس کا استعمال خود کو نزلہ زکام سے محفوظ رکھنے کے لیے آپ اس طریقے کو بھی اپنا سکتے ہیں اور صحت مند غذائیں کھا کر بیماری سے بچ سکتے ہیں۔ اس کے لیے پروبائیوٹک غذاﺅں میں اچھے بیکٹیریا آپ کی قوت مدافعت کو توانائی بخشتے ہیں۔
اور آپ نزلہ زکام سے محفوظ رہتے ہیں۔ جنرل آف سائنس اینڈ میڈیسنز ان اسپورٹس میں شائع ایک تحقیق کے مطابق ایک رگبی کھلاڑیجو پروبائیوٹک سپلیمینٹ کا استعمال کرتا ہے اس میںنزلہ زکام اور معدے کے انفیکشن کی شکایات کم دیکھی گئی جبکہ پروبائیوٹکس نہ لینے والوں میں اس کی تعداد زیادہ ہے۔ تاہم اس کا یہ مطلب نہیں کہ پروبائیوٹکس لینے والوں کو نزلہ و زکام نہیں ہوتا، ہاں ان میں اس کی علامات کم ہوجاتی ہیں ایسے لوگوں کے مقابلے میں جو پروبائیوٹکس کا استعمال نہیں کرتے۔ تو اگر آپ نزلہ و زکام سے بچنا چاہتے ہیں تو اوپر بتائی گئی احتیاطی تدابیر پر عمل کریں لیکن کوئی سپلی مینٹس یا ادویات لینے سے قبل اپنے معالج سے ضرور رجوع کریں ۔

- Advertisement -

You might also like

- Advertisement -