وزراء کی 60 روزہ کارکرگی رپورٹ : وزیراعظم نے کس وزیر کی کارگردگی کو بہترین قرار دے دیا؟

اسلام آباد (سٹار ایشیا نیوز اسپیشل) معروف صحافی ضمیر حیدر کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے کابینہ کے اجلاس میں وزراء کی پرفارمنس کا جائزہ لیا۔عمران خان کے پاس وزراء کی دو ماہ کی کارگردگی کی رپورٹ سامنے آئی ۔اس اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے وزراء کو یہ بھی بتایا کہ وہ کس کس کی کارگردگی سے خوش نہیں ہیں۔عمران خان پہلے بھی اس بات کا اعلان کر چکے ہیں کہ اگر کوئی وزیر کام نہیں کر رہا تو وہ کرپشن کے ضمرے میں آ رہا ہے۔ ضمیر حیدر نے مزید کہا کہ وزراء کی کاگردگی کو باقاعدہ اعداد و شمار کے لحاظ سے دیکھا گیا جس کے مطابق تین وزاتوں کی کارگردگی بہتر رہی۔ جن میں وزارت داخلہ،وزارت خزانہ اور وازرت اطلاعات شامل ہیں۔جس میں وزارت داخلہ کی کارگردگی 43 فیصد،وزارت خزانہ 13 فیصد اور وزیر اطلاعات کی گارگردگی 11 فیصد رہی۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کیا ان تین وزاتوں کے علاوہ کسی کے پاس کارگردگی دکھانے کو کچھ ہے؟۔ وزیراعظم نے کئی وزراء کی کارگردگی پر تحفظات کا اظہار کیا۔ عمران خان نے کہا کہ تین ماہ بعد میں ایک بار پھر سے رپورٹ چیک کروں گا اور کارگردگی نہ دکھانے والوں کو اپنے عہدے سے ہاتھ دھونا پڑے گا۔ جب کہ ایک بار عمران خان نے کہا تھا کہ ہم پنجاب کابینہ کے وزراء کی کارگردگی کو دیکھ رہے ہیں اور سو دنوں کے بعد ہم ناقص کارگردگی دکھانے والے صوبائی وزراء کو فارغ کر دیں کریں گے اور کارگردگی دیکھنے کے بعد ہی مزید لوگوں کو کابینہ میں شامل کرنے کے بارے میں فیصلہ کریں گے۔ خیال رہے وزیر اعظم عمران خان نے اپنی حکومت کے 60 دن ختم ہونے پر وزراء سے 60 روزہ کاکردگی کی رپورٹ مانگ تھی۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو بنے ہوئے 2 ماہ مکمل ہو چکے ہیں ۔اس عرصے کے دوران پاکستان تحریک انصاف کی حکومت اپنے 100 روزہ پلان پر عملدرآمد کے لیے انتہائی پر عزم نظر آتی ہے۔ اس سلسلے میں جہاں تحریک انصاف کی حکومت مقبول فیصلے کرکے عوامی حمایت سمیٹ رہی ہے وہیں تحریک انصاف کی حکومت کو کچھ سخت فیصلے بھی کرنے پڑ رہے ہیں۔یاد رہے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے یہ کہا گیا تھا کہ 100 روزہ مرحلہ وزراء کے لیے بھی ٹیسٹنگ فیز ہے اور جو وزراء کام کریں گے وہ رہیں گے اور جو کام نہیں کریں گے وہ گھر جائیں گے۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق عمران خان نے کہا ہے کہ وزراء کی کارکردگی کو خود مانیٹر کروں گا ، عوامی سہولت کے منصوبے ترجیحی بنیادوں پر مکمل کئے جائیں۔ وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت خیبرپختونخوا پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا کی عوام نے ہمیں ایک بار پھر مینڈیٹ دیا ، پہلے 100 روز میں حقیقی اور مؤثر تبدیلی نظر آنی چاہیے۔ عمران خان نے کہا ہے کہ صوبے میں پہلے سے بہتر کام کرنا ہوگا،میرٹ پر سمجھوتہ کیا نہ کریں گے، صوبے میں جاری منصوبوں کی بروقت تکمیل یقینی بنائی جائے ، عوامی سہولت کے منصوبے ترجیحی بنیادوں پر مکمل کئے جائیں۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ وزراء کی کارکردگی کو خود مانیٹر کروں گا ، وزراء با اختیار ہونے کیساتھ جوابدہ بھی ہوں گے۔

- Advertisement -

You might also like

- Advertisement -