’’محمد عامر کو اب یہ فیصلہ کرنا پڑے گا کہ۔ ۔ ۔ ‘‘ بالآخر شعیب اختر میدان میں آگئے، ایسی بات کہہ دی کہ حسن علی کی آنکھیں بھی کھلی کی کھلی رہ جائیں گی

لاہور (سٹارایشیانیوزاسپیشل) سابق فاسٹ بولر شعیب اختر کا کہنا ہے کہ اگر محمد عامر ڈراپ ہوسکتے ہیں تو پھر حسن علی بھی باہر بیٹھ سکتے ہیں۔

لاہور میں سابق اسپیڈ اسٹار شعیب اختر کا کہنا تھا کہ محمد عامر کو اب یہ فیصلہ کرنا پڑے گا کہ بڑا بولر بننا ہے یا نہیں، عامر کو اپنی اسپیڈ بڑھانا پڑے گی اور پہلے والا جذبہ اور جوش واپس لانا ہوگا، ابھی ان کی عمر ہے اور ان کے پاس وقت بھی ہے، ٹیم سے ڈراپ ہونا ایک اچھا سیٹ بیک ہے اور انہیں اس چیز کو ایک اچھے موقع کے طورپر لینا چاہیے تاکہ وہ پہلے جیسے محمد عامر بن کر ٹیم میں کم بیک کریں۔

حسن علی سے متعلق پوچھے گئے سوال پر راولپنڈی ایکسپریس کا کہنا تھا کہ جس طرح محمد عامر کو ڈراپ کیاگیاہے اگر حسن علی بھی زیادہ عمدہ کارکردگی نہیں دکھائے گا تو اس کے بارے میں بھی ایسا سوچا جاسکتا ہے، موجودہ کرکٹ میں ایک فاسٹ بولرسے کم پرفارمنس کی توقع نہیں ہوتی، اگر مین بولر وکٹیں نہیں لے گا اور ٹیم کو نہیں جتوائے گا تو پھر رزلٹ اچھا نہیں آتا اور سب پرپریشر پڑتا ہے، اچھی کارکردگی کے لیے ضروری ہے کہ آپ کی اسپیڈ برقرار رہے اور کوشش کرنی چاہیے کہ اس میں اضافہ ہوتا رہے۔

آسٹریلیا کے خلاف محمد عباس کی کارکردگی پر بات کرتے ہوئے اسپیڈ اسٹار نے کہا کہ محمد عباس ایک بڑا اسمارٹ فاسٹ بولر ہے، اس نے اس تاثر کو ختم کردیا کہ سلو پچز پر کم پیس کے ساتھ وکٹیں نہیں لی جاسکتیں، وہ 4 گیندیں بیٹسمین کو کھلاتا ہے اور ایک بال ایسی پھینکتا ہے جو بلے باز کے لیے کھیلنا بہت مشکل ہوتی ہے، اچھی کنڈیشنز میں وہ پاکستانی جیت میں زیادہ بہتر کردار اداکرسکتا ہے،اس کو مزید اوپر جانا چاہیے، میری نیک تمنائیں اس کے ساتھ ہیں۔

- Advertisement -

You might also like

- Advertisement -