آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں گرفتارشہبازشریف احتساب عدالت میں پیش

لاہور: نیب نے مسلم لیگ (ن) کے صدرشہبازشریف کوآشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں احتساب عدالت میں پیش کردیا گیا۔

نیب نے آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں مسلم لیگ (ن) کے صدراورسابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کو احتساب عدالت لاہورمیں پیش کردیا ہے جہاں ان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جائے گا۔

شہبازشریف کی نیب عدالت میں پیشی کے موقع پرسیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں، لوئرمال روڈ کی ایک حصہ ٹریفک کے لئے بند جب کہ ایم اے اوکالج سے سیکرٹریٹ جانے والی سڑک کو بیریئرلگا کربند کردیا گیا ہے۔ رینجرزکے دستے بھی کسی ناخوشگوارواقعہ سے نمٹنے کے لئے گشت پرمامورہیں اورممکنہ احتجاجی لیگی کارکنوں سے نمٹنے کے لئے واٹر کینن بھی منگوا لی گئی ہیں۔
اس سے قبل گزشتہ روزنیب نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہبازشریف کی باضابطہ گرفتاری کے لیے اسپیکرقومی اسمبلی سے رابطہ کیا اوراس کے بعد گرفتاری عمل میں لائی گئی تھی۔

شہبازشریف پرالزام

نیب نے شہبازشریف کی گرفتاری پر کہا ہے کہ ملزم شہباز شریف نے بطور وزیراعلیٰ پنجاب اختیارات کا غلط استعمال کرتے ہوئے میرٹ پرٹھیکا لینے والی کمپنی کا ٹھیکا منسوخ کرا کے اپنی من پسند کمپنی کو ٹھیکا دلوایا۔

یہ پہلی گرفتاری ہے ابھی مزید گرفتاریاں ہونی ہیں، فواد چوہدری

وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ شہبازشریف کی گرفتاری خوش آئند اقدام ہے، یہ پہلی گرفتاری ہے اور مزید گرفتاریاں ہونی ہیں۔ پاکستان کو لوٹنے والوں کا احتساب ہونا چاہیے، حکومت نیب کو ہروقت ہرطرح کی مدد اور تعاون فراہم کرنے کو تیار ہے۔

حکومت جو سلوک مخالفین سے کررہی ہے کل اس کیلیے تیار رہے، نوازشریف

مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کی گرفتاری پر ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا تھاکہ حکومت اپنی نااہلی کا ملبہ شہباز شریف پر نہ ڈالے، سب جانتے ہیں کہ پی ٹی آئی حکومت اس بدترین انتقام کی ذمہ دار ہے، آج جو سلوک وہ مخالفین کے ساتھ روا رکھیں گے کل اس کے لیے انہیں تیار رہنا چاہیے اور یہی نظام قدرت ہے۔

- Advertisement -

You might also like

- Advertisement -